Daily Use Sentences

Urdu to English Sentences for Summer

Written by seekhlein

Urdu Sentences for Summer

From today, the problem of speaking English in summer is  solved. Because we have brought you the sentences you were looking. You may have turned to many platforms to carry these phrases. But here you can find not only the PDF of these phrases. You can improve your English by using these summer phrases regularly in your daily life. You can also use summer phrases at different times in your life.

Sentences for Summer

These Urdu to English sentences for summer will be really helpful for your daily conversation with people. Learn these sentences and practice them in your conversation regularly.

The days of relaxation are over because winter is ending. اب سکون کے دن ختم ہوئے کیونکہ سردی جا رہی ہے۔ 
The same mosquito will be the same restlessness again. اب پھر سے وہی مچھر ہوگا وہی بے سکونی۔     
The markets will be crowded again at night and desolate in the afternoon. راتوں کو پھر سے  مارکیٹوں میں ہجوم ہوگا اور دوپہر کو ویرانی۔
The pleasure of staying up and watching movies secretly in the quilt is about to end. راتوں کو دیر تک جاگ کے رضا ئی میں چھپ کر فلمیں دیکھنے کے مزے بھی ختم ہونے والے ہیں۔
There will be the same load shedding as before and same crying. پہلے کی طرح وہی لوڈ شیڈنگ ہوگی وہی رونا دھونا۔
 Now again the use of electricity will be more. اب پھر سے بجلی کا استعمال زیادہ ہو جائے گا اور بجلی کے بلوں کا پوچھنا ہی کیا۔
Most of Father earning will be spent on electricity bills. ابا جان کی کمائی کا زیادہ تر حصہ بجلی کے بلوں میں خرچ ہو جایا کرے  گا۔
Now the Mother’s “two fan use” instructions are about to begin. اب امی کی دو   پنکھے چلانے والی ہدایات بھی شروع ہونے والی ہیں۔
We stayed up at night because of mosquito bites. رات مچھر کاٹنے کی وجہ سے ہم جاگتے رہے۔
I was bitten by mosquito at night. رات مجھے مچھر نے بہت کاٹا۔
Solano is blowing. لوچل رہی ہے۔
Dab the sweat off your face. اپنے چہرے سے پسینہ پونچھ لو۔
It’s hot today. آج گرمی ہے۔
Hide inside the homes, dust storm is coming. گھروں میں چھپ جاؤ اندھیری آرہی ہے۔
I am sweating. مجھے پسینہ آرہا ہے۔

The evening heat was stifling. شام کی گرمی  حبس والی تھی۔
I am thirsty. مجھے پیاس لگی ہے۔
It’s raining outside and I am still sweltering. باہر بارش ہو رہی ہے اور مجھے ابھی بھی شد ید گرمی لگ رہی ہے۔
What do you want to drink? آپ کیا پینا چاہتے ہیں؟
I want water. مجھے پانی چاہیے۔
The summer are around the corner. گرمیاں آنے والی ہیں۔
I like this kind of weather. مجھے اس طرح کا موسم پسند ہے۔
I don’t like this kind o weather. مجھے اس طرح کا موسم پسند نہیں ہے۔
It’s not even cold in the shadow. یہاں تک چھاؤں میں بھی ٹھنڈ نہیں ہے۔
Turn the fan on. پنکھا چلا ؤ۔
Turn the fan up. پنکھا تیز کرو۔
Don’t put on your coat, it’s hot today. اپنا کوٹ مت پہنو، آج گرمی ہے۔
Put on your sunhat and sunglasses. اپنی ٹوپی اور چشمہ پہن لو۔
The weather has warmed up. موسم گرم ہو گیا۔
I am looking forward to summer holidays. میں گرمی کی چھٹیوں کے لیے بے چین ہوں۔
I can’t stand heat. میں گرمی برداشت نہیں کر سکتا۔

What do you like to do the most in the summer? آپ گرمیوں میں سب سے زیادہ کیا کرنا پسند کرتے ہو؟
I like swimming in the summer. مجھے گرمیوں میں تیرنا پسند ہے۔
What’s your favorite season. آپ کا پسند دیدہ موسم کون سا ہے؟
My favorite season is summer. گرمیاں میرا پسند یدہ موسم ہے۔
Why is this your favorite season? یہ آپ کا پسند دیدہ موسم کیوں ہے؟
How was your summer vocation? آپکی گرمیوں کی چھٹیاں کیسی تھیں؟
Stay inside, it’s very sunny today. اندر رہو باہر بہت دھوپ ہے۔
In summer the days are longer and the nights are shorter. گرمیوں میں دن لمبے اور راتیں لمبی ہو جاتیں ہیں۔
Don’t forget to apply sunscreen lotion all over the body before going outside, باہر جانے سے پہلے سن سکرین لگانا مت بھولیں۔
How’s the weather today? آج موسم کیسا ہے؟
I am very thirsty. مجھے بہت پیا س لگی ہے۔
Today the weather in Karachi was hot and humid. آج کراچی میں موسم گرم اور نمی وا لا تھا۔
It’s sunny today.  آج دھوپ ہے۔
The thunder of clouds frightened me. بادلوں کی گرج نے مجھے ڈرا دیا۔
I am sweating a lot. مجھے بہت پسنہ آرہا ہے۔

Sentences for Summer PDF Download

These Urdu to English sentences for summer can be downloaded in PDF for free. This will help you to revise these sentences later. You can download these sentences by the following link.


    Warning: Trying to access array offset on value of type bool in /home/seekhlei/public_html/wp-content/themes/voice/core/helpers.php on line 2595

About the author

seekhlein

Leave a Comment